2017 اگست 19

عمیر ملک

سورج گرہن


1999 کا سورج گرہن (تصویر: وِکی کامنز)
سورج گرہن اس وقت وقوع پذیر ہوتا ہے، جب چاند زمین اور سورج کے درمیان آتا ہے۔ یوں تو چاند ہر مہینے زمین اور سورج کے درمیان آتا ہے لیکن اس کا مدار بیضوی اور زمین کے مقابل ذرا سا (تقریبا 5 ڈگری) تِرچھا ہونے کی وجہ سے، عام طور پہ، اس کا سایہ زمین پہ نہیں پڑتا۔ زمین اور چاند اپنی گردش کے دوران جب بھی ایک دوسرے کے برابر  آتے ہیں، تب زمین سے سورج یا چاند گرہن نظر آتا ہے۔ ایک سال میں کم از کم 2 اور زیادہ سے زیادہ 5 بار سورج گرہن دیکھا جا سکتا ہے۔ مکمل سورج گرہن اس وقت لگتا ہے جب چاند سورج کو مکمل طور پہ چُھپا دیتا ہے۔ چاند، سورج کے مقابلے میں چار سو گنا چھوٹا ہے لیکن سورج، چاند کے مقابلے میں زمین سے تقریبا چار سو گنا زیادہ فاصلے پہ ہے۔ اسی تناسب کی وجہ سے زمین سے دونوں تقریباً ایک سائز کے دکھائی دیتے ہیں۔ چاند کے بیضوی مدار  کے باعث، مکمل سورج گرہن کے وقت چاند زمین سے اور زیادہ قریب ہو جاتا ہے اور سورج سے زیادہ بڑا دکھائی دیتا ہے اور اسے مکمل چھپانے میں کامیاب ہو جاتا ہے۔

سورج گرہن (وکیپیڈیا)

سورج گرہن کے وقت، چاند کا سایہ دو طرح سے زمین پہ پڑتا ہے، ایک سائے کا مرکز (umbra) اور دوسرا سائے کا پھیلاو (penumbra)۔ جس جگہ چاند کے سائے کا مرکز پڑتا ہے، وہاں سے مکمل سورج گرہن دیکھا جا سکتا ہےاور سائے کے پھیلاو والی جگہوں سے جُزوی سورج گرہن نظر آتا ہے۔ مکمل سورج گرہن کی صورت میں سورج کی روشنی مکمل طور پر رُک جاتی ہے اور زمین پہ کچھ منٹوں کیلئے دن میں بھی رات کا سماں ہو جاتا ہے۔ سورج کے گرد موجود اس کی فضا تک دیکھی جا سکتی ہے، جو سیاہ سورج کے گرد ایک  روشن ہالے کی صورت میں نظر آتی ہے۔ تمام جاندار اس غیر معمولی قدرتی عمل کو محسوس کرتے ہیں اور اس سے متاثر ہوتے ہیں۔ مثال کے طور پر،  پرندے کچھ لمحوں کیلئےبولنا اور چہچہانا بند کر دیتے ہیں اور کِھلے ہوئے پھول تک بند ہو جاتے ہیں، جیسے کہ رات کے وقت ان کا معمول ہوتا ہے۔ بعض جانوروں میں سورج گرہن کے باعث خوف اور بےچینی بھی پیدا ہوجاتی ہے۔ یوں تو مکمل سورج گرہن سال میں ایک سے دو مرتبہ وقوع پذیر ہوتا ہے لیکن چاند کے سائے کا مرکز صرف 60 سے 70 میل تک چوڑا ہوتا ہے، یہی وجہ ہے کہ زمین پہ کسی بھی ایک جگہ مکمل سورج گرہن تقریبا 400 سال بعد ہی دیکھا جا سکتا ہے۔ 
اسی لئے مکمل سورج گرہن کو دیکھنے کیلئے لوگ پُرجوش ہوتے ہیں کیونکہ بعض لوگوں کو یہ زندگی میں ایک بار ہی دیکھنے کو ملتا ہے!
سورج کو روشن حالت میں براہ راست دیکھنا ناممکن ہے۔ اسی لئے لوگ گرہن کی حالت میں بے دریغ سورج کی طرف دیکھتے ہیں، جو کہ انسانی آنکھ کیلئے شدید نقصان دہ ہے اور مستقل اندھے پن تک کا باعث بن سکتا ہے۔ سورج کی روشنی، خواہ وہ تھوڑی ہی کیوں نہ ہو، براہ راست انسانی آنکھ کیلئے خطرناک ہے۔ اس عمل کیلئے خصوصی عینک یا آلات کا استعمال کرنا چاہیئے۔ اس کے ساتھ ساتھ سورج کی براہ راست روشنی موجودہ دور کے ڈیجیٹل کیمروں کے سینسر بھی ناکارہ کر سکتی ہے۔
 21 اگست 2017 کو متحدہ ریاستہائے امریکہ میں مکمل سورج گرہن نظر آئے گا۔ مکمل سورج گرہن  کی پٹی جسے Path of totality بھی کہا جاتا ہے، میں امریکہ کے ایک سِرے سے دوسرے سِرے تک کی تقریباً ۱۸ ریاستیں شامل ہیں۔ اس سے پہلے  امریکہ میں اس طرح کا سورج گرہن جو ایک ساحل سے دوسرے ساحل تک دکھائی دیا تھا، وہ 1918 میں رونما ہوا تھا۔ 21 اگست کو صرف امریکی ریاستوں میں ہی مکمل سورج گرہن دیکھا جا سکتا ہے، اس کے علاوہ کئی دوسرے ممالک میں جزوی گرہن رونما ہوگا۔

عمیر ملک

عمیر ملک -